تاریخ آغاز داخلہ

شعبہ درس نظامی

کیلئے تمام درجات میں قدیم و جدیدداخلہ ان شاء اللہ تعالیٰ بروز بدھ ۸؍شوال۱۴۳۷ھ مطابق ۱۳؍جولائی ۲۰۱۶ء سے شروع ہونگئے۔

نوٹ : تمام بیانات براہ راست نشر بھی ہوتے ہیں۔


 

تعارف جامعہ

جامعہ دارالعلوم کراچی، دینی درس گاہوں کے اس مقدس سلسلے کی ایک کڑی ہے جو اس برّصغیر میں اللہ کے کچھ نیک بندوں نے انگریزی استعمار کی تاریک رات میں دین کی شمعیں روشن رکھنے کے لئے قائم کیا تھا۔

 

مزید تفصیل

نتائج امتحانات

ہر جماعت کے، سال کے دوران تین امتحانات ہوتے ہیں۔ سہ ماہی، ششماہی اور سالانہ، اوراچھے نمبروں میں کامیاب ہونے والے طلبہ کی انعامات کے ذریعہ حوصلہ افزائی کی جاتی ہے۔

 

مزید تفصیل

نوٹس بورڈ

شعبہ درس نظامی کیلئے تمام درجات میں قدیم و جدید داخلہ انشاء اللہ تعالیٰ بروز پیر غالباً۷؍شوال۱۴۳۵ھ مطابق ۴؍اگست۲۰۱۴ء سے شروع ہوگا۔حسب معمول دارالعلوم کی مسجد کے قریب قائم کردہ استقبالیہ کیمپ سے اجراء فارم انشاء اللہ تعالیٰ مذکورہ تاریخ سے کردیا جائے گا۔

مزید تفصیل

قواعد داخلہ

درس نظامی کی تعلیم العامۃ (السنۃ الثالثۃ) یعنی سیکنڈری کے تیسرے سال سے شروع ہو کر عالمیہ (السنۃ الثانیۃ) یعنی دورہ حدیث پر ختم ہوتی ہے، یہ کل آٹھ سال کا دورانیہ ہوتا ہے۔ اس میں داخلے کے لئے میٹرک پاس ہونا ضروری ہے۔

مزید تفصیل


 

طریقہ تعاون

جامعہ دارالعلوم کراچی کے لیے امدادی رقم درج ذیل پتہ پر بھیجی جا سکتی ہیں، جس کی رسید وصولیابی کے فوراً بعد روانہ کر دی جاتی ہے۔ اگر کوئی رقم زکوٰۃ صدقہ جاریہ یا کسی اور خاص مد کی بھیجی جائے تو اس کی صراحت فرمادی جائے، ایسی مدات کو جامعہ دارالعلوم کراچی میں علیحدہ رکھنے اور ان کے خاص مصرف پر خرچ کرنے کا پورا اہتمام کیا جاتا ہے۔

مزید تفصیل

منصوبے

جامعہ دارالعلوم کراچی میں مختلف شعبوں کی بڑھتی ہوئی ضروریات کے پیش نظر تعمیر کا کام مسلسل جاری ہے اور اب تک بہت سی تعمیرات مکمل ہوگئی ہیں۔ اس کے باوجود عظیم الشان تعمیری کاموں کی فوری ضرورت ہے۔

 

 

 

مزید تفصیل

علمی کتب خانہ

جامعہ دارالعلوم کراچی کا علمی کتب خانہ بفضلہ تعالیٰ ملک کے ممتاز ترین علمی کتب خانوں میں سے ہے بلکہ اسلامی علوم کے بارے میں یہ ملک کا ایسا جامع ترین کتب خانہ ہے جس میں ایک لاکھ سے زائد کتابوں کا وقیع ذخیرہ موجود ہے۔ 

 

 

مزید تفصیل

فتوی معلوم کیجئے

سوال پوچھنے والے حضرات مندرجہ ذیل امور ملاحظہ فرمالیں
ایک استفتاء میں تین سے زائد سوال نہ لکھیں اور بہتر یہ ہے کہ ایک استفتاء کا جواب ملنے کے بعد دوسرا استفتاء بھیجیں۔
دارالافتاء جامعہ دارالعلوم کراچی

 

مزید تفصیل